nabeel_qureshi_director 41

کشمیریوں کی حمایت پر ہدایتکار نبیل قریشی کا اکاؤنٹ بند

مقبوضہ کشمیر میں بھارت کی ریاستی دہشت گردی کا سلسلہ جاری ہے اور مقبوضہ وادی گزشتہ 20 روز سے مکمل لاک ڈاؤن ہے۔

مقبوضہ کشمیر میں سخت کرفیو اور دیگر پابندیوں کے باعث بچوں کے دودھ، ادویات اور اشیائے ضروریہ کی قلت ہوگئی ہے، اس کے ساتھ ساتھ غاصب فوج اِن اقدامات کے خلاف احتجاج کرنے والے کشمیری مظاہرین پر بھی تشدد کا سلسلہ شروع کررکھا ہے۔

ان سب حالات پر سوشل میڈیا پر تنقید کرنا بھی بھارتی حکومت کو برداشت نہیں ہے، مقبوضہ کشمیر کی صورتحال پر ٹوئٹ کرنے والوں کے اکاؤنٹ بھی معطل کیے جارہے ہیں۔

پاکستان میں بھی کئی نامور شخصیات کے ٹوئٹر اکاؤنٹ بھارتی مظالم کے خلاف آواز بلند کرنے پر بند کیے جا چکے ہیں جس کا پاکستان کی حکومت نے بھی نوٹس لیا۔

ٹوئٹر نے اب ہدایتکار نبیل قریشی کا اکاؤنٹ بھی معطل کر دیا ہے جس کے بارے میں انہوں نے انسٹاگرام اطلاع دی اور لکھا کہ کشمیری مظالم کے خلاف آواز اٹھانے پر ان کا اکاؤنٹ معطل کیا گیا۔

نبیل قریشی نے اب تک پاکستان کی کئی سپر ہٹ فلموں میں ہدایتکاری کے فرائض سرانجام دیے ہیں جس میں ’نامعلوم افراد‘، ’ایکٹر ان لاء‘، ’نامعلوم افراد 2‘ اور ’لوڈ ویڈنگ‘ شامل ہیں۔

معطل کیے گئے نبیل قریشی کے اکاؤنٹ پر فالوورز کی تعداد 20 ہزار سے زائد تھی جبکہ ان کے بائیوگرافی میں فلمی کیرئیر سے متعلق بھی تحریر تھا تاہم اس کے باوجود ایک مخصوص بھارتی گروپ کی شکایت پر ٹوئٹر انتظامیہ نے فوری کارروائی کی۔

اس سے قبل ٹوئٹر نے پاکستان ٹی وی اور ریڈیو ہوسٹ فصیح ذکی کا اکاؤنٹ بھی معطل کیا تھا۔

ٹوئٹر انتظامیہ کو بھارتی مظالم کے خلاف آواز کو دبانے کی کوششوں پر شدید تنقید کا سامنا ہے اور کئی صارفین کی جانب سے ان کا اکاؤنٹ فوری بحال کرنے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔

بعض حلقوں کا خیال ہے کہ ٹوئٹر اور دیگر سوشل میڈیا ویب سائٹس میں اہم عہدوں پر کام کرنے والے بھارتی شہری پاکستانی اور کشمیری صارفین کی آواز دبانے میں ملوث ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں