Burhan-Wani 79

کشمیر میں برہان وانی کی تیسری برسی: وادی فوجی چھاؤنی میں تبدیل

مقبوضہ وادی کشمیر میں حزب المجاہدین سے تعلق رکھنے والے نوجوان کمانڈر برہان وانی کی آج تیسری برسی منائی جارہی ہے۔ اس موقع پرپوری وادی میں ہڑتال کے سبب سڑکوں پر سناٹا ہے اور نظام زندگی پوری طرح مفلوج ہے۔

قابض بھارتی افواج نے سیکیورٹی کے نام پر وادعلاقے کے حالات سے دنیا کو بے خبر رکھنے کے لیے اپنے روایتی ہتھکنڈے کے طور پر انٹرنیٹ اور موبائل سروسز معطل کردی ہیں۔ی چنار کو ’فوجی چھاؤنی‘ میں تبدیل کردیا ہے اور جگہ جگہ چوکیاں قائم کرکے گشت بڑھا دیا ہے جب کہ علاقے کے حالات سے دنیا کو بے خبر رکھنے کے لیے اپنے روایتی ہتھکنڈے کے طور پر انٹرنیٹ اور موبائل سروسز معطل کردی ہیں۔

مقبوضہ وادی کشمیر میں حق خود ارادیت کا مطالبہ کرنے والی تنظیموں نے ہرتال کی کال دینے کے ساتھ ساتھ مظاہروں کا اعلان بھی کررکھا ہے۔

ماضی میں اس موقع پر بھارت کی قابض سیکیورٹی فورسز اور بے گناہ نہتے کشمیریوں کے درمیان ہمیشہ جھڑپیں ہوئی ہیں جس میں معصوموں نے اپنی جانوں کی بازی ہاری ہے اور یا پھر وہ زخمی ہوکر اسپتالوں میں داخل ہوئے ہیں۔

عالمی خبررساں ایجنسی کے مطابق بھارتی حکام نے کولگام سمیت چار اضلا ع میں موبائل و انٹرنیٹ سروسز معطل کی ہیں جب کہ جموں کو سری نگر سے ملانے والی اہم شاہراہ پر بھی سیکیورٹی کی بھاری نفری تعینات کی گئی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں