shafqat-mehmood 54

وزیراعظم کی روزمرہ استعمال کی اشیاء کی قیمتیں مناسب سطح پر رکھنے کی ہدایت

وفاقی کابینہ نے پیمرا کو ہدایت کی ہے کہ سزا یافتہ افراد کے بیانیئے کے فروغ کے لئے قومی الیکٹرانک اور پرنٹ میڈیا کے استعمال کی حوصلہ شکنی کی جائے۔وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود نے آج سہ پہر اسلام آباد میں کابینہ اجلاس میں کیے گئے فیصلوں کے بارے میں ذرائع ابلاغ کو بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ کابینہ نے نوٹس لیا ہے کہ کسی بھی جمہوریت میں ذاتی مفادات کے فروغ یا سزا یافتہ یا مقدمات میں ملوث افراد کو قومی اداروں پر دبائو ڈالنے کے لئے ذرائع ابلاغ کے استعمال کی قطعی اجازت نہیں ہے۔وزیراعظم عمران خان نے مشیر خزانہ ڈاکٹر عبد الحفیظ شیخ اور ایف بی آر کے چیئرمین کو ہدایت کی کہ آٹے ‘ گھی اور دالوں سمیت اشیائے ضروریہ کی قیمتوں کو مناسب سطح پر رکھا جائے تاکہ کم آمدنی والے افراد پر اضافی بوجھ نہ پڑے۔انہوں نے بعض تنظیموں کے چند افراد کے لئے ملازمت میں توسیع اور انہیں منتخب کرنے کیلئے ذرائع ابلاغ میں شائع ہونے والے اہلیت کے معیار کے رجحان پر گہری تشویش ظاہر کی۔وزیراعظم نے کہا کہ سرکاری تنظیموں کے ان ذمہ دار افراد کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی جو سرکاری شعبے کی آسامیوں کے لئے امیدوار بھرتی کرتے وقت بے جا حمایت یا جانبداری کا مظاہرہ کریں گے۔کابینہ نے اس امر پر تشویش ظاہر کی کہ سابق وفاقی وزیر خواجہ آصف اپنے دور وزارت میں ایک غیر ملکی ادارے کے تنخواہ دار ملازم تھے جو نہ صرف ان کے منصب کی بلکہ ان کے حلف کی بھی خلاف ورزی تھی۔کابینہ نے وزارت داخلہ کو ہدایت کی کہ وہ اس خلاف ورزی پر تحقیقات مکمل کر کے رپورٹ پیش کریں۔کابینہ کو سابق صدر آصف زرداری اور سابق وزیراعظم نوازشریف کے مختلف غیرملکی دوروں اور قومی خزانے پر ان کے پڑنے والے بوجھ کے بارے میں تفصیلی بریفنگ دی گئی۔شفقت محمود نے آصف زرداری کے دوروں کے بارے میں تفصیلات سے آگاہ کرتے ہوئے بتایا کہ انہوں نے اپنے دور کے دوران 134 غیرملکی دورے کئے اور 257 دن بیرون ملک گزارے۔انہوں نے ان دوروں پر ساڑھے تین ہزار افراد کو بھی اپنے ہمراہ رکھا۔ ان دوروں پرایسے وقت میں قومی معیشت سے ایک ارب بیالیس کروڑ روپے خرچ کئے گئے جب ملک قرضوں کے بھاری بوجھ تلے دباہوا تھا۔شفقت محمود نے کہا کہ زرداری نے اکیاون مرتبہ دبئی کے دورے کئے اور ان دوروں پر دس کروڑ روپے خرچ کئے جبکہ ان میں سے اڑتالیس دورے نجی نوعیت کے تھے۔انہوں نے برطانیہ کے سترہ دوروں پر 32 کروڑ روپے خرچ کئے۔وفاقی وزیر نے کہا کہ نوازشریف نے اپنے دور اقتدار کے دوران 262 دن بیرون ملک گزارے۔انہوں نے ان غیرملکی دوروں پر ایک ارب 84 کروڑ روپے خرچ کئے۔نوازشریف نے 24 مرتبہ لندن کے دورے کئے جن پر بائیس کروڑ انتالیس لاکھ روپے لاگت آئی۔انہوں نے سترہ مرتبہ سعودی عرب کے دورے بھی کئے جن پر قومی خزانے سے بارہ کروڑ روپے خرچ ہوئے۔شفقت محمود نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان امریکی صدر ٹرمپ کی دعوت پر اس ماہ امریکہ کا دورہ کر رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ یہ فیصلہ کیا گیا ہے کہ وزیراعظم اخراجات کی بچت کے لئے امریکہ میں پاکستانی سفیر کی رہائشگاہ پر قیام کریں گے۔انہوں نے کہا کہ اس دورے کے دوران اخراجات کو کم کرنے کی ہرممکن کوشش کی جائے گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں