19

ریاستی دہشت گردی کی تازہ کارروائی،شوپیاں ایک اور کشمیری شہید

مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوجیوں نے اپنی ریاستی دہشت گردی کی تازہ کارروائی کے دوران آج ضلع شوپیاں میں ایک اور کشمیری نوجوان کو شہید کر دیا۔ فوجیوں نے نوجوان کو ضلع کے علاقے نروانی میں محاصرے اور تلاشی کی پر تشدد کارروائی کے دوران شہید کیا۔ قابض انتظامیہ نے ضلع میں موبائل فون انٹرنیٹ سروس معطل کر دی۔ فوجیوں نے ضلع پلوامہ کے علاقے نازنین پورہ میں بھی اسی طرح کا آپریشن کیا اور گھر گھر تلاشی لی۔ کل جماعتی حریت کانفرنس نے سرینگر میں ایک بیان میں امرناتھ یاترا کے دوران سرینگر جموں شاہراہ عام ٹریفک کیلئے بند کرنے کے قابض انتظامیہ کے آمرانہ حکمنامے کی شدید مذمت کی۔ بیان میں کہا گیا کہ کشمیری ہندو یاتریوں کی کھلے دل کیساتھ مدد کرتے ہیں لیکن اس بات پر ان کی حوصلہ افزائی کے بجائے انہیں محصور کیا جارہا ہے اور ٹریفک کی آمد و رفت بند کر کے انہیں مشکلات سے دوچار کیا جا رہا ہے۔ جموں مسلم فرنٹ نے ایک بیان میں کہا کہ سرینگر جموں شاہراہ کی بندش سے افراتفری کا ماحول پید ا ہو گا اور سیاحوں سمیت لوگ مشکلات کا شکار ہونگے اور معیشت بھی متاثر ہوگی۔ امرناتھ یاترا کے دوران شاہرہ پرعام شہریوں کی نقل و حرکت پر پابندی اور قاضی گنڈ تا بانیہال ریل سروس کی بند ش کے خلاف لوگوں کی ایک بڑی تعداد نے پریس انکلیو سرینگر میں احتجاجی دھرنا دیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں